بالی ووڈ اداکارعرفان خان انتقال کرگئے

ممبئی: نامور بالی ووڈ اداکار عرفان خان 53 سال کی عمر میں اپنے مداحوں کو افسردہ چھوڑ کر دنیا سے رخصت ہوگئے۔

یاد رہے کہ عرفان خان کو  مارچ 2018 میں نیورو اینڈ کرائن کا مرض لاحق ہو گیا تھا وہ علاج کے لیے بھارت سے برطانیہ منتقل ہوگئے تھے۔

اس وقت عرفان خان نے سوشل میڈیا پر بتایا تھا کہ وہ گزشتہ کئی روز سے طبیعت میں خرابی محسوس کر رہے تھے اور انہیں ابتدائی طور پر پتہ چلا کہ وہ کسی خطرناک یا موذی مرض میں مبتلا ہیں۔

تاہم انہوں نے واضح کردیا تھا کہ ابھی مکمل طور پر اس بات کا پتہ نہیں چلا کے انہیں کون سی بیماری لاحق ہے اور وہ کس اسٹیج پر پہنچ چکی ہے۔

یاد رہے کہ 2019 میں وہ صحتیاب ہوکر بھارت واپس آئے تھے اور اس کے بعد ان کی فلم ’انگریزی میڈیم‘ بھی ریلیز ہوئی تھی جو کامیاب ثابت ہوئی تھی۔

چند روز قبل عرفان خان کی والدہ کا بھی بھارتی شہر جےپور میں انتقال ہوگیا تھا اور خبریں تھیں کہ عرفان لاک ڈاؤن کی وجہ سے اپنی والدہ کے جنازے میں بھی شرکت نہی کر سکے تھے

عرفان خان نے ٹیلی ویژن اور تھیٹر سے کیریئر کا آغاز کیا، بعدازاں وہ 1988 کی فلم ’سلام بومبے‘ میں مختصر کردار کے لیے جلوہ گر ہوئے اور یہی سے ان کے فلمی کیریئر کا آغاز ہوا۔

وہ اپنے کیریئر میں ’حاصل’، ’مقبول‘، ’لائف ان اے میٹرو‘، ’دی لنچ باکس‘، ’حیدر‘، ’پیکو‘، ’تلوار‘ اور ’ہندی میڈیم‘ جیسی کامیاب فلموں میں جلوہ گر ہوئے۔

انہوں نے اپنے کیریئر میں بھارتی نیشنل ایوارڈ اور فلم فیئر ایوارڈ جیسے اعزازات بھی حاصل کیے۔

ان کی آخری فلم ’انگریزی میڈیم‘ رواں سال ریلیز ہوئی تھی جس میں تجزیہ کاروں اور مداحوں نے عرفان خان کے کام کو خوب سراہا۔

عرفان خان بولی وڈ کے ساتھ ساتھ ہولی وڈ فلموں میں بھی جلوہ گر ہوئے، انہوں نے ’سلم ڈاگ ملینیئر‘، ’لائف آف پائے‘، ’دی امیزنگ اسپائے ڈر مین‘ اور ’جریسک ورلڈ‘ جیسی نامور ہولی وڈ فلموں میں کام کیا۔

اداکار کے انتقال کی خبر سامنے آنے کے بعد شوبز سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے سوشل میڈیا پر اپنے دکھ کا اظہار کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے