کپتان سخت پریشان ، کونسے 2وفاقی وزیرفارغ ہونے والے ہیں ؟  نواز شریف کی دھماکہ خیز پیشنگوئی

کپتان سخت پریشان ، کونسے 2وفاقی وزیرفارغ ہونے والے ہیں ؟ نواز شریف کی دھماکہ خیز پیشنگوئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) کپتان کے 2انمول رتن نا اہل ہو نے والے ہیں ، نواز شریف کی دھماکہ خیز پیشنگوئی۔ تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ روز چند اہم شخصیات کی لندن میں سابق وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات ہوئی ہے جس میں سابق وزیر اعظم نے پاکستان میں آنے والے دنوں میں یقینی طور پر آئینی بحران پیدا ہو نے کی پیشنگوئی کی ہے ۔ کہا گیا ہے کہ ملاقات کرنے والے جب سوال کیا کہ یہ بحران کیسے پیدا ہوگا توکپتان کے 2انمول رتن نا اہل ہو نے والے ہیں ، نواز شریف کی دھماکہ خیز پیشنگوئی ، کونسے 2وفاقی وزرا فارغ ہورہے ہیں ؟  نواز شریف نے جواب دیا کہ الیکشن کمیشن دو رہنماؤں کو نااہل قرار دے گا۔عارف حمید بھٹی نے دعویٰ کیا کہ نوازشریف نے کہا کہ الیکشن کمیشن فواد چوہدری اور اعظم سواتی کو نااہل کر دے گا، ان کا کہنا تھا کہ اب یہ سوچنے والی بات ہے کہ نوازشریف کو کس نے بتایا کہ الیکشن کمیشن پی ٹی آئی کے دو رہنماؤں کو نااہل کر دے گا۔کہا جاتا ہے کہ سعید مہدی (سابق بیوروکریٹ) نوازشریف کے بہت قریبی ہیں۔دوسری جانب الیکشن کمیشن کے سابق سیکرٹری اور ماہر قانون کنور دلشاد نے کہا کہ وفاقی وزرا فواد چوہدری اور اعظم سواتی کے الیکشن کمیشن کے خلاف الزامات پر نااہلی کی سزا بھی ہو سکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت اور الیکشن کمیشن کے معاملے میں آئینی بحران پیدا ہو رہا ہے۔ الیکشن کمیشن نے سوچ سمجھ کر قدم اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی وزرا کے الیکشن کمیشن پر الزامات کے نتیجے میں ان پر توہین عدالت لگ سکتی ہے اور انہیں نااہلی کی سزا بھی ہو سکتی ہے۔ یاد رہے کہ الیکشن کمیشن پر عائد کیے جانے والے الزامات پر وفاقی وزرا فواد چودھری اور اعظم سواتی کو نوٹسز جاری کیے گئے تھے۔الیکشن کمیشن نے وفاقی وزرا کے الزامات کی تردید کرتے ہوئے مسترد کر دیئے اور اعظم سواتی سے الزامات کے ثبوت مانگنے کا بھی فیصلہ کیا ۔الیکشن کمیشن نے پیمرا سے متعلقہ ریکارڈر طلب کیا ہے جب کہ ایوانِ صدر، سینیٹ کمیٹی کی کارروائی اور میڈیا بریفنگ سے متعلق ریکارڈ مرتب کرنے کی بھی ہدایت کی ۔ جبکہ دوسری جانب الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کیے گئے نوٹس پر رد عمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چودھری نے کہا کہ الیکشن کمیشن کا احترام اپنی جگہ لیکن شخصیات کے سیاسی کردار پر بات کرنا پسند نہیں تو اپنا کنڈکٹ غیر سیاسی رکھیں نوٹس آیا تو تفصیلی جواب دیں۔

Share

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے