افغانستان میں کسی بھی فوجی کارروائی کی حمایت نہیں کرینگے،وزیراعظم عمران خان

افغانستان میں کسی بھی فوجی کارروائی کی حمایت نہیں کرینگے،وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد(ویب ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ افغانستان مسئلے کا بہترین حل افغان حکومت اورطالبان کا مل کرچلنا ہے،افغانستان میں پاکستان کو عسکری اداروں کے کنٹرول کرنے کا تاثر غلط ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے افغان میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ وسطی ایشیائی ریاستوں کےساتھ تجارت افغانستان میں امن سےممکن ہے،افغانستان میں غلط تاثر موجود ہے کہ پاکستان کو عسکری ادار ے کنٹرول کرتے ہیں، ہمیشہ سے یہی مؤقف رہا ہے کہ افغان مسئلے کا حل عسکری نہیں ،سیاسی ہے۔
 عمران خان نے کہاکہ پاکستان کو افغانستان کے مسائل کا ذمہ دار ٹھہرانا غلط ہے ،افغان حکومت اور طالبان ملکر چلیں یہی مسئلے کا بہترین حل ہے ۔انہوں نے کہاکہ افغانستان سمیت خطے میں قیام امن کیلئے پاکستان نےجتنی محنت کسی اور ملک نے نہیں کی ،کوئی بھی ملک افغانستان میں قیام امن کیلئے پاکستان سے زیادہ محنت اور کا م کرنے کا دعویٰ نہیں کرسکتا ۔انہوں نے کہاکہ فوج میری حکومت کے ہر اقدام کی حمایت کررہی ہے۔وزیراعظم نے کہاکہ ہم نےواضح الفاظ میں کہاہےکہ فوجی کارروائی کی ہرگزحمایت نہیں کریں گے،چندطالبان رہنماوَں کےخاندان یہاں مقیم ہونےسےہم صرف طالبان کومذاکرت پرمجبورکرسکتےہیں۔وزیراعظم نے کہاکہ بھارت نے5اگست 2019کویکطرفہ اقدام سےمقبوضہ کشمیرکی حیثیت تبدیل کی جس کے بعد پاکستان نے بھارت کیساتھ تمام تعلقات معطل کردیئے ہیں۔پانچ اگست کا اقدام واپس لئے بغیر بھارت کیساتھ بات چیت ممکن نہیں ۔

Share

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

close